میرے فیورٹ سر غلام مصطفیٰ؛ تحریر؛ کالم نگار ..رانا احتشام الحق، مکمل تحریر پڑھنے کیلئے لنک پر کلک کریں

0
114

میرے فیورٹ سر غلام مصطفیٰ
آج کی اس تحریر کا عنوان ایک ایسی شخصیت ہے جو اپنے ❤️ دل کا بلکل بھی برا نہیں ہے۔
آپ اسے آزما کے دیکھ سکتے ہیں
ویسے تو اگر آپ کی ان سے ملاقات نہیں ہوئی اگر آپ صرف ان کی شاعری اور کالم پڑھتے ہیں تو آپ کو معلوم پڑے گا کہ یہ انسان نہایت ہی سنجیدہ مزاج ہے مگر آپ کچھ وقت اس کے ساتھ گزار لیں تو آپ کو اپنی برادری کا لگے گا یعنی
میں یونائیٹڈ کالج میں دو سال تک پڑھتا رہا میں نے پہلے ایک سمسٹر کے بعد بولنا ہی چھوڑ دیا بولنے سے مراد لوگوں پر لطیفے مارنا ان کے طرح طرح کے نام رکھنا میرا یہ ماننا ہے کہ ہر انسان یہ کام نہیں کر سکتا یہ بھی اللہ تعالیٰ کی دی ہوئی صلاحیت ہے جسے استعمال کرکے انسان دوسروں کو خوشی مہیا کرتا ہے اور انسان لطیفے بھی اسی بھی مارتا ہے جس سے اسے کوئی ڈر نہ ہو کہ یہ کچھ کہے گا تو نہیں
بات سر غلام مصطفیٰ کی ہورہی ہے کہ یونائیٹڈ کالج کے ٹیچرز میں سر عامر عثمان خان کے بعد کوئی سٹوڈنٹ کے ساتھ کھلنے ملنے والا ٹیچر سر غلام مصطفیٰ ہیں انہوں نے ابھی تک صرف ایک سمسٹر پڑھایا ہے مگر انہوں نے education کو انسان آسان کرکے ہمارے سامنے پیش کیا ہے کہ میرے جیسا لاپروا اور آوارہ لڑکا بھی ابھی آگے نہ صرف mphill بلکہ D Phill کرنے کا سوچ رہا ہے
مجھے معلوم ہے کہ آپ ابھی میری یہ بات سن کر ہنس رہے ہوں گے تو میں آپ کی ہنسی اور حیرانی میں اضافی کرتا ہوں کہ میں چھٹے سمسٹر کا سٹوڈنٹ ہوں یہاں تک کیسے آیا یہ اللہ تعالیٰ خوب جانتے ہیں
سر مصطفیٰ صاحبِ کی اس کالج میں آمد سے پہلے میں یہ سوچتا تھا اور اکثر اپنے گھر والوں کو کہتا تھا کہ مجھے نہیں لگتا کہ میں bs کے اس پروگرام کے بعدآگےپڑھ سکوں گا
مگر میرے والد جب اپنے کسی دوست کے بچے کو دیکھتے تھے کہ وہ پڑھا رہا ہے تو اکثر مجھ پہ غصہ ہوتے کہ میرا شوق ہے کہ میرا بیٹا بھی کم از کم m Phill کرے مگر میں اس وقت یہ سمجھتا تھا کہ mphill پتہ نہیں کیا ہے مصطفیٰ صاحب کالج آئے جب انہوں نے کہا کہ میں mphill ہوں اور PhD کے بارے میں سوچ رہا ہوں تو میں نے سوچا کہ یار یہ بندہ تو میرے جیسا بولتا ہے نہ اس میں کوئی attitude ہے اور اگر یہ PhD کرسکتا ہے تو میں بھی کروں گا
سر غلام مصطفیٰ کے ہوتے ہوئے میں کسی بھی سٹوڈنٹ کو تنگ کرسکتا ہوں
اگر وہ نہیں ہوتے تو میری خاموشی سب کو حیران کردیتی ہے
آخر میں میں اپنے آئی ٹی کے دوسرے ٹیچر سر نوید کے بارے میں بھی لکھوں گا وہ بھی اچھے ٹیچر ہیں مگر غلام مصطفیٰ صاحب کے ساتھ میری عادات ملتی ہیں وہ ایک دوست بھی ہیں

کالم نگار ..رانا احتشام الحق سٹوڈنٹس یونائیٹڈ کالج دربار سلطان باہو…