تلخ تجربہ (میری بات ) کالم نگار رانا عاشق علی

0
47

تلخ تجربہ (میری بات )

کالم نگار رانا عاشق علی
جسے چاہتا ہے عزت دیتا ہے اور جسے چاہے ذلت دیتا ہے ۔۔۔۔۔۔ تو مصنوعی عزت کے پیچھے کیوں بھاگتے ہیں۔۔۔۔ عزت گھاڑی پیسا دولت محل کسی پر اپنا خوف ڈر پیدا کرنا اور پھر اپنی ذات کی بھی غلطی ہم مالی جسمانی اور ایمان کی کمزوری کی وجہ گھبرا جاتے ہیں صاحب مال کو اس طرح سے عزت نہیں ملتی ۔۔ عزت ملنا اللہ کی خوشنودی حاصل کرنے میں چھپی ہے ۔ ذلت اور عزت خدا کے ہاتھ میں ہے جسے جیسے چاہے نواز دے اس لئے عزت کی توقع توکل کے ساتھ اپنے پر چھوڑ دیں رب کے علاوہ نہ تو کوئی ذلت سے اور نہ کسی کو عزت سے نواز سکتا ہے ۔۔ اگر کوئی بظاہر آپ کو عزت دینے کی کوشش کرتا ہے تو پس پردہ ہزاروں حقائق چھپے ہوتے ہیں آج کے دور میں عزت کے حقدار کو عزت سے نہیں نوازہ جاتا بلکہ اس شخص کو عزت کے نام پر اسکی چاپلوسی میں لگا رہتا ۔ اس کے پیچھے ہزاروں مطلب منافقتیں اور چالیں دیکھنے کو ملتی ہیں ۔ اس کو عزت نہیں چاپلوسی کہا جاتا ہے ۔ اس لئے عزت کے لئے اللہ سے سربسجود ہوکر طلب میں رہنا چاہئے۔۔۔۔ ایسے ہزاروں واقعات جنوبی پنجاب اور سندھ میں ملتے ہیں لوگ ڈر خوف ظلم و ستم کے زور پر مظلوم سے عزت نہیں چاپلوسی کرواتے ہیں ۔۔۔ اسے عزت و احترام میں لانا گمراہی نادانی اور ایمان کی کمزوری ہے