ڈسکہ کی انتظامیہ قانون سے بالا تر ۔۔۔ یا غفلت کا شکار۔۔۔ ڈسکہ شہر میں ہر چوراہے پر ماہ مقدس رمضان المبارک کی حرمت کو پامال کیا جارہا ہے تحریر ۔ رانا عاشق علی

0
50

ڈسکہ کی انتظامیہ قانون سے بالا تر ۔۔۔ یا غفلت کا شکار۔۔۔ ڈسکہ شہر میں ہر چوراہے پر ماہ مقدس رمضان المبارک کی حرمت کو پامال کیا جارہا ہے رانا عاشق علی

ڈسکہ کی انتظامیہ قانون سے بالا تر ۔۔۔ یا غفلت کا شکار۔۔۔ ڈسکہ شہر میں ہر چوراہے پر ماہ مقدس رمضان المبارک کی حرمت کو پامال کیا جارہا ہے ڈسکہ شہر کے کونے کونے بالخصوص جی روڈ لاری اڈا میں مسافر اور مریضوں کے نام پر سرعام ریسٹورنٹ دن بھر کھلے رہتے ہیں ۔ ریسٹورنٹ کی پرمیشن کے لئے کوئی قانون لاگو کیا گیا ہے جہاں تک مجھے معلوم ہے شاید میں غلط بھی ہوسکتا ہوں قانون اس بابرکت اور مقدس و حرمت والے مہینے میں ریسٹورنٹ کھولنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ۔۔۔ بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈسکہ میں منتھلی وصول کرنے کے عوض ریسٹورنٹ کھلے ہیں جو انتظامیہ کی مجرمانہ غفلت ہے ۔۔۔ اس ضمن میں انتظامیہ کے آفسران خود مجرم پائے جاتے ہیں۔۔۔ بالخصوص اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ لمبی نیند سوئے ہوئے ہیں یا پھر وہ اپنے فرائض منصبی سے غافل ہیں ۔ بعض افراد کا کہنا ہے اسسٹنٹ کمشنر ڈسکہ نے ریسٹورنٹ کھولنے کی اندر کھاتے اجازت دی ہوئی ہے۔۔۔ شہر بھر میں مختلف رائے پائی جاتی ہیں ۔۔۔ ڈسکہ شہر میں پرائس کنٹرول مجسٹریٹ بھی اپنے فرائض منصبی ادا کرنے میں ناکام نظر آتے ہیں ۔۔ بندہ ناچیز نے انتظامیہ کے دفاتر سے بطور ایک شہری معلوم کیا کیا اس مقدس بابرکت رحمتوں برکتوں اور نعمتوں کے مہینے میں کسی کو اجازت ہے تو انہوں نے بتایا ڈی سی کے پاس بھی اختیار نہیں کہ وہ ریسٹورنٹ سرعام کھولنے کی اجازت دے دیں۔۔۔ ڈسکہ کی انتظامیہ سرعام کھلے ریسٹورنٹ کو فوری بند نہ کروائے۔۔۔ اندرں حالات آفسران بالا کو مطلع کیا جائے گا۔۔رانا عاشق علی