ملتان، سانحہ کرائسٹ چرچ (نیوزی لینڈ) جس نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا، امن کا نشان سمجھی جانے والی مساجد کو نشانہ بنایا گیا نمازِ جُمعہ کیلئے موجود مسلمانوں کو بے دردی سے شہید کرنے کے اس واقعہ کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے،صاحبزادہ سلطان احمد علی کی پریس کانفرنس، رپورٹ محمدعمرفاروق، مکمل تفصیلات جاننے کیلئے لنک پر کلک کریں

0
234

صاحبزادہ سلطان احمد علی ملتان پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئِے.
پریس کانفرنس کے اہم نکات:
مسلم انسٹی ٹیوٹ طویل عرصے سے اسلام کا پیغام اپنی تحقیقی سرگرمیوں کے ذریعے نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں پھیلا رہا ہے جس سلسلے میں انٹرنیشنل کانفرنسز اور سیمینارز کا انعقاد کیا جاتا ہے ۔ جس میں وفاقی وزراء، مذہبی اسکالرز، ماہرین تعلیم کے ساتھ ساتھ غیر ملکی سفارتکار اور انٹرنیشنل اسکالرز شرکت کرتے ہیں ۔ مسلم انسٹیٹیوٹ کے زیر اہتمام مختلف موضوعات پہ تحقیقات بھی شائع کی جاتی ہیں ۔

پندرہ مارچ دو ہزار انیس کو کرائسٹ چرچ نیوزی لینڈ میں مسجد نور پر ایک ایسا سانحہ پیش آیا جس نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا ۔ جس میں صرف مسلمانوں کو ہی نہیں بلکہ امن کا نشان سمجھی جانے والی مساجد کو بھی نشانہ بنایا گیا ۔ نمازِ جُمعہ کیلئے موجود مسلمانوں کو بے دردی سے شہید کیا گیا ۔ اس واقعہ سے نہ صرف اسلامی دُنیا بلکہ ہر مذہب کے انسان دوست لوگوں کو خون کے آنسو رلا دیا ۔ اس واقعہ کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم اور وہاں کے عوام جس طرح مسلمانوں اور اسلام کیلئے آگے آئے وہ بھی قابلِ ستائش ہے ۔
جہاں اتنی زیادہ شہادتوں کا صدمہ اور مسجد کی بے حرمتی مسلمانوں کو جھیلنا پڑی
وہیں دنیا کو یہ باور ہو گیا کہ اسلام امن کا دین، اور مسلمان امن کے پیامبر ہیں ۔ اسی سلسلے کو آگے بڑھانے کیلئے مسلم انسٹیٹیوٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ ہم کرائسٹ چرچ مسجد کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے سمیت نیوزی لینڈ کے عوام سے اظہارِ یکجہتی اور دنیا کو یہ بتانے کیلئے کہ مساجد امن کا گھر ہیں ۔ ہم نے دنیا کی پہلی علامتی انسانی مسجد بنانے کا اعلان کر رہے ہیں ۔ جس کی تشکیل میں اب تک بیس ہزار سے زائد پاکستانی بھائیوں نے شرکت کی خواہش کا اظہار کیا ہے اور بتدریج شرکت کرنے والے افراد کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ اس سلسلے میں کل بارہ اپریل بروز جمعۃ المبارک دربار عالیہ حضرت سلطان باھُوؒ (شور کوٹ، جھنگ) صبح نو بجے انسانوں پہ مشتمل علامتی مسجد تشکیل دی جائے گی ۔ اس سلسلے میں کرائسٹ چرچ کی متاثرہ ”مسجد النور” کی شکل میں تقریباً بیس ہزار سے زائد پاکستانی خود کو ڈھالیں گے ۔
دنیا کی پہلی انسانی مسجد کی علامتی تشکیل کے ساتھ ساتھ تمام پاکستانی یک زبان ہو کر بلند آواز میں درود شریف کا نذرانہ بھی بارگاہِ رسالت مآب (صلی اللہ علیہ و الہ وسلم) میں پیش کریں گے اس کے ساتھ ساتھ تمام افراد مسجد کا پیغام (اسلام از پیس/ اسلام امن ہے) کی صدائیں بلند کریں گے ۔ اس لحاظ سے ہم کہہ سکتے ہیں کہ یہ دنیا کی پہلی مسجد ہوگی جو خود اپنا پیغام سُنا رہی ہو گی جسے پوری دنیا سُنے گی ۔ اس موقعہ پر مسلم انسٹیٹیوٹ کی طرف سے کرائسٹ چرچ مسجد کے شہدا کیلئے اجتماعی فاتحہ خوانی کروائی جائے گی ۔
اس سلسلے میں ہم نے نیوزی لینڈ کی وزیراعظم سے رابطہ بھی کیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ انکی جانب سے خیرمقدمی
جواب آج شام تک موصول ہوجائے گا

رپورٹ محمدعمرفاروق سلطان نیوز