اندھیر نگری منظوم کلام محمد اقبال شاہد چونیاں

0
54

اندھیر نگری
منظوم کلام محمد اقبال شاہد چونیاں

‏بے حس لوگوں کی نگری میں
احساس جگانے نکلے ہو !

بیٹھے بیٹھے یہ کیا سوجھی؟
کیوں ذات گنوانے نکلے ہو؟

ہر بات تمہاری رد ہو گی
کیوں حق منوانے نکلے ہو؟

دل کالے پتھر جیسے ہیں
ایسوں کو منانے نکلے ہو!

الزام لگانے والوں کو
اخلاق سکھانے نکلے ہو؟