تعلیمی بورڈز امتحانی پرچوں کی چیکنگ کیلیے ازسرنو نظام وضع کرے۔۔۔۔اہم کالم۔۔۔۔۔سلطان نیوز پر۔۔۔۔۔انتخاب ۔۔امتیاز شیخ

0
103

تعلیمی بورڈز امتحانی پرچوں کی چیکنگ کیلیے ازسرنو نظام وضع کرے۔۔۔۔اہم کالم۔۔۔۔۔سلطان نیوز پر۔۔۔۔۔انتخاب ۔۔امتیاز شیخ
بورڈ امتحانات میں ری چیکنگ کے ضابطے میں بہتری لائی جائے۔۔
آئیے سب مل کر مہم چلائیں
ان اساتذہ کے خلاف جو بورڈ کے پیپرز صحیح چیک نہیں کرتے اور طلباء کی محنت ضائع کرتے ھیں اور ان کو ذھنی مریض بناتے ھیں میرے کلینک پر متعدد طلباء ڈپریشن کے علاج کے لئے آ چکے ھیں جن میں اکثریت بچیوں کی ھے یہ طلباء بورڈز سے اپنے پرچوں کی ری چیکنگ کے بعد ڈپریشن کا شکار ھوۓ کیونکہ ان کے صحیح سوالوں کو سرے سے ھی کاٹ کر غلط کیا ھوا تھا اور بورڈ کا کوئی قانون موجود نہیں جس کے ذریعے ان سوالات کو صحیح کروایا جا سکے آپ سب اس نا انصافی کے خلاف آواز اٹھائیں
1) بورڈ پیپر چیک کرنے کا ایسا نظام وضع کرے جس سے ھر چیکر فول پروف چیکنگ کرے
2) چیکر کی غلطیوں پر جرمانہ/سزا تجویز کی جاۓ
3) اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ جس مضمون کا پیپر ھو اسی کا استاد پیپر چیک کرے
4) طالب علم ری چیکنگ میں اگر ثابت کرے کہ اس کا پیپر صحیح چیک نہیں ھوا تو اس کی داد رسی کی جاۓ اور متعلقہ چیکر کو مجوزہ سزا دی جائے
5) بورڈ بھاری بھرکم فیس فی پرچہ ری چیکنگ کی لیتا ہے ‘ ہوتی صرف ری کاؤنٹنگ ہے. فیس کم کی جائے.
6) مردانہ اور زنانہ مارکنگ سینٹرز بالکل الگ الگ ہوں . زنانہ مارکنگ سینٹرز میں نیک سیرت بورڈ اہلکاروں کی ڈیوٹی لگائی جائے.
7) تحصیل ہیڈ کوارٹرز پر مارکنگ سینٹرز قائم کیے جائیں تاکہ مخصوص افراد کا تسلط ختم ہو۔