سابقہ حکومتوں میں عدم توجہ کا منتظر گریٹر منصوبہ ۔۔۔موجودہ حکومت کے نظرکرم کا منتظر تحریر ۔ امجد حسین صارم کشمیر

0
69

سابقہ حکومتوں میں عدم توجہ کا منتظر گریٹر منصوبہ ۔۔۔موجودہ حکومت کے نظرکرم کا منتظر
۔۔۔۔تحریر ۔ امجد حسین صارم کشمیر

موجودہ حلقہ پی پی 125 ، این اے 114۔اور ایل اے تیس جموں ون جھنگ حلقہ اسمبلی۔ آزاد کشمیر ۔ و وزارت امور کشمیر ۔۔ کے عہد حاظر کے حلقہ برداروں سے شروع کر کے بھٹو صاحب شہید کی پہلی دستوری اور جمہوری حکومت تک ، تیس سالہ شہرۂ آفاق ، شہنشاہ تعمیرات برصغیر پاک و ہند ، شیر شاہ سوری خاندان کے ریکارڈ توڑنے والی شریف خاندان کی حکمرانی تک اور پیپلز پارٹی شہید بے نظیر بھٹو سے لیکر یوسف رضاء گیلانی و راجگان پوٹھوہار اور ایم کیو ایم تک اور جان کی امان ہو تو عہد حاظر کے ہر دلعزیز حکمران عمران خان کی انصاف پر مبنی حکومت تک ، سب کے سب کے انکے اپنے ویژن اور اپنے منشور کے مطابق ترقی کے اس دھارے میں شامل ہونے کیلیے جو کہ بقول عمران خان کہ اب ان پسماندہ علاقوں کو ترجیح دی جاۓ گی جو ہمیشہ نظرانداز ہوتے رہے ، اسی امید کی پھوٹتی کرنوں میں کوٹ فتح شاہ / کوٹلی تھل گریٹر کینال منصووبہ ۔باقر شاہ چک دس ۔ ۔چک گیارہ یو سی 93 اچھ گل امام رکھ بھریڑی۔تھل صحرا۔۔بمعہ کئی مضافاتی بستیوں کے تحصیل ١٨ ہزاری ضلع جھنگ کے ہر دور کے حکمرانوں کو جھنجھوڑ جھنجوڑ کر صدا دے رہی ہے کہ صحت و تعلیم زراعت ۔سڑکیں۔آبپاشی ۔لایو سٹاک جو مسلمہ حق بشری ہے اب اسے اپنی ترجیحات میں شامل کر لو