دارالعلوم عیدگاہ کبیر والا ایک عظیم دینی درسگاہ – تحریر حفیظ چوھدری مرکزی صدر:اسلامک رائٹرز موومنٹ پاکستان

0
162

دارالعلوم عیدگاہ کبیر والا ایک عظیم دینی درسگاہ –حفیظ چوھدری
مرکزی صدر:اسلامک رائٹرز موومنٹ پاکستان

دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا پاکستان کے دینی مدارس میں نمایاں مقام رکھتا ہے اگرچہ یہ جنوبی پنجاب کے پسماندہ علاقے ضلع خانیوال کی تحصیل کبیروالہ میں ہےمگر اس ادارے کی خدمات اس قدر ہیں کہ اب اسے ایک سند کے طور پر مانا جاتا ہے ،اس کی بنیادوں میں اکابرین دیوبند نے نمایاں کردار ادا کیا ہے حضرت مولانا مفتی عبدالخالق صاحب رحمۃ اللہ علیہ، حضرت مولانا مفتی عبدالقادر صاحب رحمۃ اللہ علیہ، حضرت مولانا مفتی محمد انور رحمۃ اللہ علیہ کی خدمات توجہات ہی تھیں کہ یہاں سے کسب فیض کرنے والے معاشرے میں ایک الگ مقام رکھتے ہیں۔
اللہ تعالی حضرت مولانا ارشاد احمد صاحب کا سایہ شفقت و محبت تادیر قائم و دائم رکھے جنہوں نے اس گلشن کی آبیاری میں اپنی تمام تر صلاحیتیں صرف کی اور علوم قرآنی وتعلیمات نبویہ کی روشنی سے جگ بھر میں فیوض و برکات پہنچا رہیں ہیں
دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا نہ صرف میرا مادرعلمی ہے بلکہ میرے والد محرم حضرت مولانا اللہ وسایا قاسم رحمۃ اللہ علیہ کا بھی مادرعلمی ہے۔
دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا سے فیض حاصل کرنے والوں کی تعداد اتنی زیادہ ہے اس پر ایک الگ سے تاریخ مرتب کی جا سکتی ہے دنیا بھر کے چپے چپے پر دین کی خدمت کرنے والے آپ کو نظر آئیں گے جن کا کسی نہ کسی درجہ میں دارالعلوم عیدگاہ کبیروالا سے ضرور تعلق ہوگا۔
وہ شخصیات جنہوں نے یہاں سے فیض حاصل کرنے کے بعد ہزاروں لوگوں کو حدیث کا سبق پڑھایا ہے ان میں نمایاں نام جامعہ اشرفیہ لاہور کے شیخ الحدیث حضرت مولانا صوفی محمد سرور رحمتہ اللہ علیہ،حضرت مولانا عبدالمجید لدھیانوی رحمۃ اللہ علیہ، حضرت مولانا ارشاد احمد صاحب ، حضرت مولانا محمد نواز سیال ، مولانا ظفر احمد قاسم، مولانا عبدالرحمن جامی، مولانا محمد اسماعیل، امام الصرف و النحو جامع المعقول والمنقول حضرت مولانا محمد اشرف شاد رحمتہ اللہ علیہ سمیت دیگر اکابر نے یہاں سے کسی نہ کسی درجے میں فیض حاصل کیا اور آج ان کی تیسری نسل تعلیم وتعلم اور درس و تدریس کے شعبے میں فرائض سرانجام دے رہی ہے۔
ہر سال کی طرح اس سال بھی دارالعلوم کبیروالا میں ختم بخاری کے موقع پر پاکستان بھر سے علمائے کرام تشریف لا رہے ہیں۔
بندہ ناچیز استاد محترم حضرت مولانا مفتی محمد جاوید اختر فاروقی اور مولانا مفتی عبدالخالق خان سکھانی صاحب کی دعوت پر اس پروگرام میں حاضر ہو رہا ہے اللہ تعالی ہمارے اس گلشن کو قیامت تک آباد رکھے اور یہاں سے فیض حاصل کرنے والوں کو دنیا کے کونے کونے میں اسلام کی دعوت پہنچانے کی توفیق عطا فرمائے.
یہ دینی مدارس ہمارے لیے نعمت خداوندی ہیں اور مسلم معاشرہ میں عام مسلمان کا قرآن و سنت کے ساتھ تعلق باقی رکھنے کے ساتھ ساتھ حلال و حرام اور جائز و ناجائز کا شعور بیدار کرنے کا اہم ترین ذریعہ ہیں۔ اللہ تعالیٰ انہیں نظر بد سے بچائیں اور ہر قسم کی سازشوں سے محفوظ رکھتے ہوئے اپنا معاشرتی کردار جاری رکھنے کی توفیق سے نوازیں۔
اور ہمیں اکابرین کی شفقتوں اور توجہات سے استفادہ کی توفیق عطا فرمائے.