بھارت کے ساتھ سوشل میڈیا جنگ میں سلطان نیوز صف اول کا کردار نبھائے گا۔۔۔یکجہتی کشمیر بارے پروگرام سے سلطان نیوز کی چیف کا اظہار خیال

0
132

بھارت کے ساتھ سوشل میڈیا جنگ میں سلطان نیوز صف اول کا کردار نبھائے گا۔۔۔یکجہتی کشمیر بارے پروگرام سے سلطان نیوز کی چیف کا اظہار خیال۔۔

بھارت پاکستان کے خلاف 7 ارب کی میڈیا کمپین چلا رہا ہے۔ میڈیا کمپین میں تمام تر سورسز پاکستان کے خلاف استعمال کیے جاتے ہیں۔ جن میں ٹیلی ویژن، اخبارات، کتابیں، سوشل میڈیا، فلمیں، ڈرامے اور ریڈیو شامل ہیں۔

حال ہی میں بھارت نے ایک ایف ایم چینل کھولا ہے جو بھارت سے بلوچی زبان میں پروگرام نشر کرے گا اور اس میں بھارتی خفیہ ایجنسیوں کے افسران بلوچ بھائیوں کو پاکستان کے خلاف کھڑا ہونے کےلیے اکسائیں گے۔ بلوچی زبان میں ہونے والا یہ پراپگینڈہ خاصہ خطرناک ہو گا۔

بنگلہ دیش کی علیحدگی سے پہلے بھی ایسا ہی کیا گیا تھا۔

آزاد کشمیر میں جب جنگِ آذادی عروج پر تھی ان دنوں پاکستانی حکومت نے آزاد کشمیر میں ایک گشتی ریڈیو سٹیشن تراڑکھل کے مقام پر قائم کیا تھا۔ پراپگینڈہ کی دنیا میں شاید ہی اتنی کامیابیاں کسی ریڈیو چینل کو ملی ہوں گی جتنی اس چھوٹے سے ریڈیو سٹیشن نے سمیٹیں۔

اس پر ممتاز مفتی اور قدرت اللہ شہاب صاحب جیسے نامور ادیب خود نشریات جاری کرتے۔ ان نشریات نے کشمیری عوام کا لہو گرما دیا اور وہ بھارت کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے۔

یہی نہی بلکہ اس ریڈیو سے ہندی زبان میں بھی پروگرام نشر ہوتے جو بھارتی سنتے اور اپنی سرکار کو گالیاں دیتے۔

جنہیں پتہ تھا کہ یہ انفارمیشن وارفیئر ہے وہ بھارتی جی بھر کر اس ریڈیو چینل کو گالیاں دیتے۔

کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ بھارت نے اس چینل کو تباہ کرنے کےلیے اندھا دھند بمباری کی۔

مگر چونکہ وہ ریڈیو چینل کشمیر کے جنگلات میں ہوتا تھا اور ہمیشہ اس کے ٹھکانے بدلے جاتے تھے لہٰذا بھارت کی بمباری کے باوجود وہ چینل چلتا رہا۔ نہ صرف چلتا رہا بلکہ ہر بمباری کے بعد وہی چینل بھارت والوں کا کھلم کھلا مزاق اڑاتا اور بھارتی فوج والے بھارت میں بیٹھ کر تلملاتے رہتے۔

آپ کو یہ واقعہ بتانے کا مقصد یہ تھا کہ ریاستی ادارے ان محازوں پر کبھی غافل نہیں رہے ہیں بلکہ ہماری پیدائش سے بھی قبل وہ ان محازوں پر بھارت کو دھول چٹا چکے ہیں۔

مگر اب زمانہ بدل چکا ہے اور انفارمیشن وارفیئر کے طور طریقے بھی بدل چکے ہیں۔ اب انفارمیشن وارفیئر اتنا وسیع ہو چکا ہے کہ ہر پاکستانی فوجی بھی بندوق رکھ کر یہ جنگ لڑے تو بھی فتح نہیں ہو سکتی جب تک قوم خود بھی ان محازوں پہ نہ لڑے۔

ایک بات اور جس ملک میں ڈی جی آئی ایس پی آر کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر سیکولر لابی پراپگینڈہ کرتی ہو وہاں بھارت کےلیے اپنا کام کرنا مزید آسان ہو جاتا ہے۔

الیکٹرانک میڈیا پر بھارت پہلے ہی پاکستان سے جیت چکا ہے کیوں کہ جیو سے لے کر ہم ٹی وی تک ہر چینل پہ بھارتی تہذیب و ثقافت اور نظریات دکھائی دیتے ہیں۔ جب کہ پاکستانی تہذیب و ثقافت اور نظریات کا کہیں ذکر ہی نہیں میڈیا پر۔

یہی وجہ ہے کہ نئی نسل پاکستان سے زیادہ اب بھارتی ثقافت سے متاثر ہے۔ لہٰذا میڈیا کی سطح پر بھارت پاکستان سے یہ جنگ جیت چکا ہے۔

اب محاز سوشل میڈیا ہے۔ چند لوگ رضاکارانہ بنیادوں پر پچھلے 6 سالوں سے یہ جنگ لڑ رہے ہیں اور اتنے احسن انداز سے لڑ رہے ہیں کہ بھارتی ھوم منسٹر راج ناتھ یہ بیان دینے پر مجبور ہو گیا تھا کہ پاکستان سوشل میڈیا کے زریعے بھارت کو نقصان پہچانا بند کرے۔

یہ بیان نیٹ پر موجود ہے۔ مگر اس کے باوجود انفارمیشن وارفیئر کے محاز پر بھارت کے خلاف کیے گئے اقدامات ناکافی ہیں۔

کیوں کہ بھارت میں 20 کروڑ 60 لاکھ لوگ سوشل میڈیا استعمال کرتے ہیں جب کہ پاکستان میں صرف 4 کروڑ 40 لاکھ لوگ ہیں جو سوشل میڈیا استعمال کرتے ہیں۔ ان 4 کروڑ 40 لاکھ پاکستانیوں میں سے 1 لاکھ یعنی 0.001 پاکستانی بھی ایسے نہیں ہیں جو نظریاتی سطح پر بھارت کے خلاف سوشل میڈیا استعمال کرتے ہوں۔

پاکستانی گفتگو کےلیے، ویڈیوز کےلیے تصاویر کےلیے، دوستیوں کےلیے یا سیاسی اور مذھبی مقاصد کےلیے سوشل میڈیا استعمال کر رہے ہیں۔

جب کہ دوسری طرف بھارت ہے جہاں معاملات اس کے بالکل الٹ ہیں۔ اب اس لمبی بحث کو سمیٹتے ہیں۔

آج سے عہد کر لیں کہ ہم سوشل میڈیا کا صرف عامیانیہ استعمال نہیں کریں گے۔ بلکہ اسی سوشل میڈیا کے زریعے ہم بھارت کو ناکوں چنے چبوائیں گے۔

بالکل اسی طرح جیسے ہمارے بڑوں نے تراڑ کھل ایف ایم ریڈیو کے زریعے کشمیر میں بھارت کو دھول چٹائی تھی

آج سے ہم اپنی فیس بک اور ٹؤئیٹر آئی ڈیز سے بھارتیوں کو دوبارہ دھول چٹائیں گے۔

سوشل میڈیا پر کشمیر اور خالصتان کو سپورٹ کریں اور یہ پیغام دنیا بھر تک پھیلائیں۔

فرقہ وارانہ اور صوبائی بنیادوں پر مت لڑیں بھارت یہی چاہتا ہے۔

بھارت میں 63 علیحدگی پسند تحریکیں چل رہی ہیں ان کو سٹڈی کریں اور ان تحریکوں کو ہوا دیں۔

یاد رکھیں آپ اس محاز پر اپنے ملک کےلیے لڑیں یا نہ لڑیں بھارت ضرور اس محاز پر پاکستان کو نقصان دے رہا ہے۔