سعودی عرب ریاض کشمیر پریس کلب کے زیراہتمام سردار عبدالباسط خان کے حوالے سے تعزیتی ریفرنس کا انعقاد

0
176

سعودی عرب ریاض کشمیر پریس کلب کے زیراہتمام سردار عبدالباسط خان کے حوالے سے تعزیتی ریفرنس کا انعقاد
سعودی عرب( تازہ ترین سلطان نیوز) ریاض انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب کے زیراہتمام سردار عبدالباسط خان کے حوالے سے ایک تعزیتی ریفرنس منایا گیا جس کی صدارت انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب کے مرکزی صدر سردار محمد رزاق خان نے کی جبکہ مہمان خصوصی سفارت خانہ پاکستان کے ویلفیئر کونسلر شیخ عبد الشکور تھے اس کے علاوہ اس سٹیج پر کلب کے مرکزی نائب صدر اول حاجی احسان دانش ملک محمد جانگیر صدر سردار محمد نعیم خان اور عثمان نعیم بیٹھے تھے تلاوت قرآن پاک کی سعادت قاری محمد قاسم کو حاصل ہوئی نعت رسول احسان اللہ فاروقی نے پیش کی نظامت کے فرائض مرکزی جنرل سیکرٹری سردار طارق ایوب نے سرانجام دئیے ڈاکٹر سردار کرامت حسین نے ہاٹ اٹیک کے موضوع پر تبادلہ خیال کیا انہوں نے کہا کہ دل کا بند ہو جانا ان لمحات میں اچھے ڈاکٹر اور بہترین ہسپتال میں جانا سب سے اہم کام ہے اس میں کوتاہی جان کا خطرہ ہے آپ اپنی خوراک پر خصوصی توجہ دیں اور چربی والی خوراک سے پرہیز کریں ایڈوکیٹ طارق ایوب نے اپنے ابتدائی کلمات میں کہا کے مرحوم عبدالباسط خان ہمارے کلب کا جنرل سیکرٹری تھا وہ ایک بہترین انسان تھا اس کے لئے ہم آج یہ تعزیتی ریفرنس کر رہے ہیں کلب ریاض ریجن کے جنرل سیکٹری وسیم سجاد نے کہا کے قاری عبدالباسط جیسے لوگ صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں وہ ایک متحرک شخص تھا کلب کے مرکزی ڈپٹی جنرل سیکرٹری سردار محمد نصیر خان نے کہا کہ وہ منگ پلندری کی سرزمین سے پیدا ہوا جہاں تحریک آزادی کے ہیرو سبزعلی خان اور ملی خان کی زندہ کھالیں اتاریں گی مرکزی کلب کے کنوینر رانا خادم حسین نے انتہائی خوبصورت الفاظ میں ایک نظم کی شکل میں ان کو خراج تحسین پیش کیا او پی ایف کے سابق ممبر محمد اصغر قریشی نے مرحوم کے بارے میں اپنی تقریر میں کہا کہ وہ ایک اچھے اخلاق کے مالک اور نیک سیرت والی شخصیت تھے اللہ تعالی ان کو جنت الفردوس میں جگہ دے اسرار احمد نے کہا کہ وہ مسلع جدوجہد پر یقین رکھتے تھے اور ان نے عملی طور پر اس میں حصہ لیا مجلس پاکستان کے جنرل سیکرٹری حافظ عبدالوحید فتع محمد نے کہا کہ وہ حق اور سچ کے علمبردار تھے وہ پاکستان کے الحاق کے علمبردار تھے وہی اس دنیا میں آئے اور اپنے حصے کا کام کردے اللہ تعالی ان کو جنت میں جگہ دے کلب کے نائب صدر محب گل شلمانی نے کہا کے وہ سب کے ساتھ چلتا تھا کشمیر کی خدمات پر میں ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں کلب کے ممبر اقبال ودود نے کہا کے مجھے اس طرح ان کی اچانک وفات پر انتہائی صدمہ ہوا ہے اللہ تعالی ان کے خاندان والوں کو صبر عطا کرے ظہور عباس نے کہا کہ وہ سب دوستوں کو ایک ہی نظر سے دیکھتے تھے حق بات کرتے تھے ایک بہترین مقرر تھے افتخار شاکر نے کہا کہ وہ انسانیت کی خدمت کرتے تھے اور ریاض میں ان کو23 سال کا عرصہ ایک مثال ہے پرویز کھٹانہ نے کہا کہ وہ اس دنیا فانی میں کچھ عرصہ رہے پھر رخصت ہو گئے ہم ان کے اس مشن پر چلے اللہ تعالی ان کو اپنی رحمت خاص میں رکھے احسان اللہ فاروقی نے انتہائی خوبصورت الفاظ میں سردار عبدالباسط کو اشعار میں خراج تحسین پیش کیا اور سامعین سے خوب داد حاصل کی غلام نبی نواب نے انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب کا تعارف بیان کیا مولانا ہمایوں سعود نے کہا کہ وہ جمعیت علماء پاکستان کا جنرل سیکٹری تھا آج ہم ان سے محروم ہو گئے ہیں اس نے ہمارے دل میں بہت اعلی جگہ منا لی تھی وہ پاکستان اور اسلام کے بہت بڑے علمبردار تھے انہوں نے عملی طور پر اپنا کردار ادا کیا تھا کاش آج پھر محفل ہے لیکن وہ ہم میں موجود نہیں ہے مولانا شاہد نے اپنی تقریر کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم عبدالباسط ایک تحریک کا نام تھا انہوں نے عملی طور پر جہاد افغانستان میں حصہ لیا ان کو غلامی سے نفرت اور آزادی سے محبت تھی مولانا محمد بشیر نے اپنی تقریر اور اشعار میں کہا کہ آج میرا بھائی کہاں ہے مجھے میرا بھائی دے دو مجھے یقین نہیں ہوتا ہے کہ وہ مر گیا ہے وہ ہمارے خاندان اور قوم کی آنکھوں کا تارا تھا اللہ تعالی اس کو جنت الفردوس میں اعلی مقام دے ممتاز کشمیری رہنما شعلہ بیاں مقرر سردار محمد نعیم خان نے کہا کہ مرحوم قاری عبدالباسط میرے قریبی دوست تھے ان کے اور میرے نظریات میں فرق تھامیں نے ان کو ایک بہترین انسان اور تحریک آزادی کے لیے کام کرتے ہوئے دیکھا ہے وہ مسلہ کشمیر کو حق خوداریت کی نظر سے دیکھتے تھے مرکزی نائب صدر اول کلب حاجی احسان دانش نے کہا کہ ہم کافی عرصہ ایک ساتھ کام کرتے تھے وہ حساب کتاب کو انتہائی دیانت داری کے ساتھ رکھتے تھے کھبی ایک دوسرے سے شکوہ اور شکایت کا موقع نہ ملا ایسے لوگوں کی سوچ کے وطن کی آزادی کے لئے ہوتی ہے وہ اخبارات میں بھی لکھ کر بیانات دیتے تھے آج وہ ہم میں نہیں ہے ہم ان کے اہل خاندان سے اظہار تعزیت کرتے ہیں انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب الریاض ریجن کے صدر محمد جہانگیر ملک نے اپنی تقریر میں کہا کہ قاری عبدالباسط ہماری ٹیم کا حصہ تھے وہ خوش اخلاق تھے آپ اپنی دعاؤں میں ان کو یاد کیا کرے اور ان کے نام پر عمرہ بھی کریں اور ان کے کام کو جاری رکھیں ان کی زندگی کشمیر کی تحریک کےلئے اہمیت کی حامل تھی اللہ تعالی ان کو جنت الفردوس میں جگہ عطا کرے آمین مہمان خصوصی سفارت خانہ پاکستانی ویلفیئر کونسلر شیخ عبدالشکور نے اپنے خطاب میں کہا کہ میں انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب کا شکریہ ادا کرتا ہوں کے انہوں نے یہ تعزیتی ریفرنس کیا اور سفارت خانہ کو بھی مدعو کیا آج تمام مکاتب فکر کے لوگ موجود ہیں اور آپ سب یہاں پر پاکستان کے سفیر ہے قاری عبدالباسط خان کے لیے اظہار خیال کرنے والوں نے ان کو ایک بہترین شخص قرار دیا نے ان کے اس دکھ اور درد میں برابر کا شریک ہوں آپ بیرون ملک کام کر کے پاکستان کی معاشی حالت کو مضبوط کر رہے ہیں نفرت ختم کر کے پاکستان کو پیار اور محبت دو آپ اس ملک میں رہتے ہوئے اس ملک کے قانون کا احترام کریں
انٹرنیشنل کشمیر پریس کلب سعودی عرب کے مرکزی صدر سردار محمد رزاق خان نے اپنی صدارتی تقریر میں کہا کہ نے سفارت خانہ پاکستان کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے قاری عبدالباسط کے اس تعزیتی ریفرنس میں شرکت کی سفارت خانہ نے ہمیشہ اور ہر وقت ایسی کاموں میں اہم کردار ادا کیا ہے سردار محمد رزاق خان نے کہا کہ عبدالباسط نے جہاد افغانستان اور کشمیر میں حصہ لیا ہے وہ ایک بہترین انسان تھے ہم اپنے ایک بھائی سے جدا ہو گئے ہیں وہ کشمیری قوم کا ایک قیمتی سرمایہ تھے وہ ہمیشہ کشمیر کی آزادی کی بات کرتے تھے وہ عمرہ اور مدینہ منورہ میں زیارت پھر ایک تقریب کی نظامت کے بعد اس دنیا سے رخصت ہو گے14 دسمبر 2018 جمعہ کو وفات پائی اور پھر 21 دسمبر جمعہ کو قبر کے حوالے ہو گے ہماری دعا ہے کہ اللہ تعالی ان کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کرے اس پروگرام میں شرکت کرنے والوں میں وسیم خان تکبیر امتیاز احمد سرزمین خرم اردو پواینٹ پاسپورٹ کونسلر صدیق اکبر تصدق گیلانی سردار عبدالقیوم خان سردار رضاء رفیق بخت شیرخان سردار سہیل اصغر یونس ابو غالب چوہدری طاہر امجد خان محمد شریف احسن عباسی سردار ساجد خان سردار نعیم اختر شفیع خان مولانا ہمایوں معسود عثمان نعیم سردارشاکرخان محبوب الرحمن محمد اصغر قریشی عامر چشتی عتیق الرحمن کا شکریہ ادا کیا آخر میں ہمایوں سعود نے دعا کی
رپورٹ
ابوالفضل ربانی نمائندہ خصوصی سعودی عرب