خانیوال جہانیاں ماں بیٹی قتل کے دلخراش واقعہ پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے از خود نوٹس لے لیا

0
326

اسلام آباد(ویب ڈیسک )چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار نے جہانیاں میں عدالت کے باہر دو خواتین کے قتل پر از خود نوٹس لے لیا ہے ۔چیف جسٹس نے قتل سے متعلق ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد نوٹس لیا اور آئی جی پنجاب سے تین روز میں جواب طلب کر لیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جہانیاں میں اپنے شوہر اور باپ کے قتل کے کیس کی پیروی کیلئے آنے والی ماں بیٹی کو تین افراد نے بے دردی کے ساتھ دن دیہاڑے عدالت کے بعد گولیاں مار کر قتل کر دیا ہے تاہم وہاں پر پولیس اہلکاروں کے موجود ہونے کے باوجود بھی کوئی کچھ نہ کر سکا اور وہ ظالم دندناتے ہوئے وہاں سے فرار ہو گئے ۔ یہ دونوں خواتین جہانیاں کے چک 53\10Rکی رہائشی تھیں ، 40 سالہ عاصمہ بی بی اور اس کی والدہ 60 سالہ تاج بی بی کو نامعلوم افرا نے گولیاں مار کر قتل کیا ۔پولیس نے موقع پر پہنچ کر شواہد اکھٹے کر لیے ہیں اور موقع سے 10 کارتوس کے خول برآمد ہوئے ہیں ۔ پولیس نے خواتین کی لاشیں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال جہانیاں منتقل کر دی ہیں ۔خاتون کے بھائی حمید اکبر نے کہاہے کہ تینوں افراد کی شناخت ہو چکی ہے اور اس سے قبل بھی یہ لوگ سات افرادکو قتل کر چکے ہیں لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی اور انہیں گرفتار نہیں کیا گیا ہے ۔چیف جسٹس نے واقع کا از خود نوٹس لیتے ہوئے تین روز میں آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کرلی ہے ۔ چیف جسٹس اس وقت کوئٹہ کے دورے پر ہیں جہاں وہ کل سپریم کورٹ رجسٹری کی نئی عمارت کا افتتاح کریں گے
رپورٹ منور اقبال تبسم ڈپٹی بیوروچیف پنجاب